Map News

عبد اللہ عبد اللہ کا دورہ پاک افغان تعلقات میں معاون ثابت ہوگا: وزیراعظم

اسلام آباد(میپ نیوز) وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ ڈاکٹر عبد اللہ عبد اللہ کا دورہ پاکستان اور افغانستان کے باہمی تعلقات میں ایک نیا باب کھولنے میں معاون ثابت ہوگاوزیراعظم عمران خان اور افغانستان کی اعلیٰ سطحی مفاہمتی کونسل کے چیئرمین ڈاکٹر عبداللہ عبداللہ کے درمیان ملاقات کا اعلامیہ جاری کردیا گیا ہے۔وزیراعظم نے عبداللہ عبداللہ سے ملاقات میں افغان امن عمل کے کامیاب نتائج کے لئے نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ افغانستان میں تنازعہ کا کوئی فوجی حل نہیں، ایک سیاسی حل ہی آگے بڑھنے کا راستہ ہے، خوشی ہے کہ عالمی برادری نے ان کے اس مؤقف کو تسلیم کیا ہے، عالمی برادری نے افغانستان کے امن عمل کو آسان بنانے میں پاکستان کے مثبت کردار کو بھی تسلیم کیا جب کہ امن کی کوششوں میں امریکا طالبان کا امن معاہدہ ایک اہم قدم تھا۔اعلامیے کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے 12 ستمبر کو دوحہ میں انٹرا افغان مذاکرات کے آغاز کو سراہا۔ انہوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ افغان قیادت اس تاریخی موقع کا بھوپور فائدہ اٹھائے گی، امید ہے افغان قیادت وسیع البنیاد اور جامع سیاسی تصفیہ کے لیے مل کر تعمیری انداز میں کام کرے گی، جنگ بندی کے نتیجے میں ہونے والی تشدد میں کمی کے لئے تمام افغان جماعتوں کو کام کرنا ہوگا۔عمران خان نے کہا کہ ڈاکٹر عبد اللہ عبد اللہ کا دورہ پاکستان اور افغانستان کے باہمی تعلقات میں ایک نیا باب کھولنے میں معاون ثابت ہوگا، پاکستان افغانستان کے مستقبل کے بارے میں ہونے والے اتفاق کی حمایت کرے گا، پاکستان افغان تنازع کے حل کے بعد بحالی اور معاشی ترقی میں بھی افغانستان کی حمایت جاری رکھے گا، پاکستان اور افغانستان کے درمیان تجارت کے بے پناہ مواقع موجود ہیں۔اعلامیے کے مطابق وزیراعظم نے باہمی فائدہ مند تجارت کے لئے ان صلاحیتوں کا زیادہ سے زیادہ استعمال کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں کہا کہ پاکستان افغان راہداری تجارت کی سہولت کے لئے ہر طرح کی کوششیں جاری رکھے گا، افغانستان کے ساتھ دوطرفہ تجارت اور معاشی تعلقات اور عوامی تعلقات کو مزید مضبوط بنائیں گے۔اعلامیے کے مطابق وزیر اعظم نے بتایا کہ وہ صدر اشرف غنی کی دعوت پر اپنے دورہ افغانستان کے منتظر ہیں۔

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں


دلچسپ و عجیب

سائنس اور ٹیکنالوجی

اہم خبریں

تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ محفوظ ہیں۔
Copyright © 2024 Map News. All Rights Reserved